Afghan soil not used against Pakistan
Afghan soil not used against Pakistan

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کاکہنا ہے کہ جن معاملات پر پاکستان کو تشویش ہے حل کریں گے، ہماری سر زمین پاکستان کیخلاف استعمال نہیں ہو گی ۔

کابل میں طالبان ترجمان نے پریس کا نفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی وفد افغانستان میں امن و امان سے متعلق بات چیت کے لیے آیا تھا، وفد نے سیکیورٹی اور دیگر معاملات پر بات کی، پاکستان سے درخواست ہے وہ افغانوں کے لیے سرحدوں کے دروازے کھلے رکھے جبکہ پاکستان افغانستان کے ساتھ کھڑا ہے جس پر ان کے شکرگزار ہیں ۔ پاک چین اقتصادی راہداری خطے کو جوڑنے کیلئے بہت اہم منصوبہ ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ہمسایہ ہونے کے ناطے مختلف معاملات پر پاکستان کی تشویش جائز ہے تاہم جن معاملات پر پاکستان کو تشویش ہے انہیں حل کریں گے جب کہ ہماری سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال نہیں ہوگی ۔

 زبیح اللہ مجاہد کا کہنا تھا کہ امارت اسلامیہ افغانستان میں اب جنگ کا دور ختم ہو چکا ، طالبان کی طرف سے اقتدار سنبھالنے پر عام معافی کا اعلان کیا گیا ۔ پنج شیرمیں کوشش کی گئی کہ عام شہریوں کانقصان نہ ہو، کابل میں حالات ٹھیک اور ہمارےکنٹرول میں ہیں ۔ چین نے ہمیں معاونت کی یقین دہانی کرائی ہے، ہماری خواہش ہو گی چین کے بڑے اقتصادی منصوبوں کاحصہ بنیں ۔

Facebook Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here